PBM

چائلڈ سپورٹ پروگرام

 پاکستان میں غربت سے بھی نچلی سطح پر موجود غریب خاندان بنیادی معاشرتی سہولیات حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ نقد امدادکے پروگرام نے ثابت کر دیا کہ یہ تعلیمی سرگرمیوں کیلئے ایک بہت ہی موثر ذریعہ ہے۔تاہم 2005 ء میں حکومتِ پاکستان نے اس معاہدے کی یقین دہانی کرائی کہ بہت سے مقاصد میں بنیادی تعلیم کے لئے ضروری مواقع فراہم کیے جائیں گے۔ اس مقصدکیلئے مشروط نقد ادائیگی کے منصوبے (کنڈیشنل کیش ٹرانسفر پروگرام) کی منظوری دی ہے۔

 پاکستان بیت المال کا منصوبہ چائلڈ سپورٹ پروگرام ( سی ایس پی ) بہت کامیابی کے ساتھ عالمی بینک یونیسیف کے تعاون سے بچوں اور خاندانوںکے لئے کمیونٹی/عمرانی ربط کی بنیاد پر خدمات مہیا کرتا رہا ہے۔پاکستان بیت المال بذریعہ حکومتِ پاکستان پرائمری تعلیم کے لئے ۵ سے ۱۶ سال کے بچوں کو سبسڈی کے طور پر فنڈ تقسیم کرتا ہے اور خاندان کے لئے ۳۰۰ روپے ماہانہ ۔ ایک بچہ کیلئے اور ۶۰۰ روپے ماہانہ۲ بچوں کے لئے فراہم کرتا ہے۔ یہ تمام عمل ا یم ائی ایس (کمپیوٹر سوفٹ ویئر) کے ذریعے ہوتا ہے۔

 

 

بنیادی مقصد/نظریاتی اساس

 

ہمارا مشن مالی فائدے کے ذریعے غریبوں کی خواندگی کی شرح میں اضافہ کر کے ان کے لئے قابلِ احترام سماجی زندگی کی فراہمی ہے۔

نصب العین

 

ہمارا نصب العین پاکستان کے ہر غریب بچے کو تعلیم کی فراہمی ہے۔

منصو بے کے مقاصد

 

   پرائمری تعلیم میں داخلوں کی شرح میں اضافہ
   حاضری کی شرح کو بڑھانا
   غریب خاندانوں کیلئے اضافی وسائل کی فراہمی
   غربت کم کرنے کیلئے انسانی سرمائے میں سرمایہ کاری کو فروغ دینا

اہلیت

 

   سکول جانیوالے بچوں کی عمر۵سے۱۴سال ہونی چاہیں۔
   فوڈسپورٹ پروگرام/بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سروے کے تحت اہل ہوں۔
   پراکسی مین ٹیسٹنگ کی دی گئی سطح کے نیچے ہو۔

چائلڈ سپورٹ پروگرام کے اضلاع

 

مندرجہ ذیل اضلاع میں سی ایس پی پروگرام جا ری ہے۔

 

پنجاب

بہاولپور , راجن پور

 

سندھ

گھوٹکی نواب شاہ, خیرپور

 

کے پی کے

سوات

 

بلوچستان

لسبیلہ

 

آئی سی ٹی

گھانچے

سی ایس پی کی جا نچ

گیلپ پاکستان کے سروے کے مطابق آزما ئشی اضلاع میں داخلے کی شرع میں ۱۱ عشاریہ ۶۵ فیصد اضا فہ نوٹ کیا گیا۔
    سکول پروگرام کے تحت بچوں اور بچیوں دونوںکے داخلوں میں اضا فہ بالترتیب واضح طور پر نوٹ ہوا یعنی ۷۴.۱۳ فیصد اور ۰۶ .۹ فیصد ۔